شرائط پوری نا ہونے کی وجہ سے 300 سے زائد پاکستانی دبئی ائیرپورٹ پر پھنسے ہوۓ ہیں

دبئی میں پاکستان کے قونصل خانے نے بتایا کہ 304 پاکستانی دبئی میں پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز اور فلائی دبئی کے ذریعے چلنے والی پروازوں میں پھنس گئے ہیں۔

300 سے زائد پاکستانی دبئی ائیرپورٹ پر کیوں پھنسے؟

بدھ کے روز دبئی انٹرنیشنل ایئرپورٹ (ڈی ایکس بی) پر وزٹ ویزا رکھنے والے 300 سے زائد پاکستانی پھنسے ہوئے تھے۔

دبئی میں جنرل ڈائریکٹوریٹ آف ریزیڈنسی اینڈ فارنرز افیئرز (جی ڈی آر ایف اے) نے تصدیق کی ہے کہ سیاحوں کے ویزا رکھنے والوں کے داخلے کی شرائط پر عمل نہ کرنے پر مسافروں کو ڈی ایکس بی میں داخلے سے انکار کردیا گیا تھا۔ اس میں واضح کیا گیا تھا کہ متحدہ عرب امارات کے امیگریشن قواعد کے مطابق، پاکستانی جو یہاں آے ہیں ان کے پاس نہ تو ہوسٹل ریزرویشن ہے اور نہ ہی کسی رشتے دار کا حوالہ ہے اور نہ ہی ان کے پاس واپسی کی ٹکٹ بکنگ ہے۔

شرائط پوری نا ہونے کی وجہ سے 300 سے زائد پاکستانی دبئی ائیرپورٹ پر پھنسے ہوۓ ہیں

اتھارٹی نے یہ بھی کہا کہ ویزا کے قواعد کی پاسداری کرنے والے بہت سارے مسافروں کو ڈی ایکس بی آنے پر تاخیر کا سامنا نہیں کرنا پڑتا ہے۔

دبئی میں پاکستان کے قونصل خانے نے بتایا کہ 304 پاکستانی منگل کو دبئی میں پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز (پی آئی اے) اور فلائی دبئی کے ذریعے چلنے والی پروازوں میں دب گئے۔

قونصل خانے میں ڈپٹی قونصل جنرل گیان چند نے بتایا کہ سفارتی افسران نے اس مسئلے کو حل کرنے کے لئے ایئرپورٹ کا دورہ کیا۔ مسافروں نے لاہور سے سفر کیا تھا۔

پی آئی اے میں متحدہ عرب امارات کے ریجنل منیجر

پی آئی اے میں متحدہ عرب امارات کے ریجنل منیجر شاہد مغل نے بتایا کہ مسافر بنیادی طور پر بلیو کالر پاکستانی تھے۔ انہوں نے مزید کہا، “جن مسافروں کے پاس (مطلوبہ) فنڈز ہیں وہ ملک میں داخل ہوسکتے ہیں یا ان کے پی آر اوز ان کے داخلے کا انتظام کرسکتے ہیں۔ باقی مسافروں کو واپس پاکستان بھیج دیا جائے گا۔”

انہوں نے کہا کہ پی آئی اے مسافروں کو مطلع کرنے کے لئے اپنے تمام دفاتر میں سفر کی ضرورت کو گردش کرے گی۔ ٹریول ایجنٹوں نے بتایا کہ انہوں نے ضرورت کے بارے میں بھی اپنے صارفین کو آگاہ کرنا شروع کردیا ہے۔

You might also like