دبئی میں صحرا کی صفائی کے بڑے آپریشن کا آغاز

ماحولیات کے تحفظ کے سلسلے میں دبئی میں صحرا کی صفائی کے بڑے آپریشن کا آغاز کر دیا گیا ہے، پچھلے چھ ہفتوں کے دوران دبئی میں تقریبا 130 ٹن کوڑا اٹھایا گیا تھا

دبئی میں صحرا کی صفائی کے بڑے آپریشن کا آغاز

دبئی میونسپلٹی نے ماحولیات کے تحفظ کے سلسلے میں پانچ ماہ کے صحرائی صفائی آپریشن شروع کردیا ہے۔

100 کارکنوں کی ایک سرشار ٹیم، 33 کنٹرول اور سپروائزری عملہ نیز چھ صحرائی بائک اپریل کے آخر تک جنگلی علاقوں کی صفائی کے لئے استعمال کی جائیں گی۔ میونسپلٹی نے کہا کہ کوڑا جمع کرنے اور لے جانے کے لئے 24 اضافی میکانزم ہوں گے۔

جن خطوں پر خصوصی توجہ دی جائے گی ان میں القدرا اسٹریٹ، الروویا 3، ال وارسان 2 اور 3 نیز حٹا، سیاحتی مقامات، القدرہ لیکس، لوو لیکس اور العویر میں دفاعی کیمپ کے پیچھے کا علاقہ شامل ہیں۔

طرابلس اسٹریٹ، وادی الاماردی، وادی الشبک ، امارات روڈ ، الخوازنیج میں عمان اسٹریٹ اور التائی بھی کارکن صفائی کریں گے۔

بلدیہ میں کچرے کے انتظام کے ڈائریکٹر

بلدیہ میں کچرے کے انتظام کے ڈائریکٹر، عبدالمجید سیفائی نے کہا کہ سردیوں کے مہینوں میں سیاحوں اور پیدل سفر کرنے والوں کی بڑھتی ہوئی تعداد کے جواب میں مزدوروں کو باربی کیو سے کچرا اکٹھا کرنے اور جمع کرنے کا سامان دیا جائے گا۔

انہوں نے کہا، “کام کے منصوبے کا آغاز اکتوبر کے آغاز میں ہوا تھا۔”

“بلدیہ کے عملہ اکتوبر کے آغاز سے لے کر وسط نومبر تک ان جگہوں سے تقریبا 130 ٹن عام کچرا جمع کرنے اور نکالنے میں کامیاب رہا۔”

مسٹر سیفائی نے کہا کہ صحرا کی سائٹس کا استعمال کرنے والے سیاحوں کا فرض ہے کہ وہ اس کو استعمال کرنے کے بعد اس علاقے کو صاف ستھرا بناتے ہوئے سماجی ذمہ داری کا مظاہرہ کریں۔

انہوں نے کہا، “انہیں کچرا ضائع کرنے اور باربی کیو کی اوشیشوں کے لئے مقرر کردہ ذخیرہ کرنے کی سہولیات کا استعمال کرنا چاہئے اور ریت کو براہ راست آگ نہیں لگانی چاہئے بلکہ اس کے لئے مقرر کردہ چمنی کا استعمال کرنا چاہئے۔”

متحدہ عرب امارات کے باشندوں کو کوڑے دانوں کو بحفاظت ٹھکانے لگانے کے لئے تعلیم دینے کے لئے ایک آن لائن مہم چلائی گئی۔

“ان سیاحوں کے لئے باقاعدہ پروگرام ہوگا اور ہم کوشش کر رہے ہیں کہ عوام تک پہنچنے والے علاقوں میں آڈیو آگاہی کے کاموں میں ڈرون استعمال کریں۔”

You might also like